سندھ میں مارکیٹیں بند رکھنے کا حکم معطل

سندھ میں مارکیٹیں بند کرنا کا فیصلہ معطل
سندھ میں مارکیٹیں اور بازار رات 9 بجے بند کرنے کا حکم معطل کر دیا۔محکمہ داخلہ سندھ نے سابقہ حکم کی معطلی کا باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔

سندھ میں مارکیٹیں رات 9 بجے بند کرنے کا حکم معطل

کراچی (نیوز ڈیسک)سندھ حکومت نے سندھ میں مارکیٹیں اور بازار رات 9 بجے بند کرنے کا حکم معطل کر دیا۔محکمہ داخلہ سندھ نے سابقہ حکم کی معطلی کا باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔

فیصلہ عید کی خریداری میں آسانی کے لئے کیا کیا ہے

تفصیلات کے مطابق عیدالاضحی کی مناسبت سے بازار اور مارکیٹیں رات 9 بجے بند کرنے کا حکم نامی عارضی طور پر معطل کر دیا گیا ہے۔ اتوار کے روز صوبائی محکمہ داخلہ نے اس حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے۔

نیا حکم نامہ 11 جولائی تک نافذ العمل ہوگا

نئے حکم نامے کے مطابق 11 جولائی تک سندھ میں  مارکیٹیں اور بازار رات 9 بجے کے بعد بھی کھلے رکھے جا سکتے ہیں۔ سندھ حکومت نے یہ فیصلہ عید کی رعایت کرتے ہوئے کیا ہے،تاکہ عوام کو عید کی خریداری میں مشکلات کا سامنا نہ ہو۔

تاجروں نے عوام اور کاروبار کی آسانی کے لئے رعایت مانگی تھی

اس سے قبل سندھ کی تاجر برادری نے حکومت سے رعایت کا مطالبہ کیا تھا اور کہا تھا کہ عید کے قریب خصوصا چاند رات کو عوام خریداری کے لئے بازاروں کا رخ کرتے ہیں،ان کی ضرورت کے پیش نظر بازار رات 9 بجے بند کرنے کے حکم پر نظر ثانی کی جائے۔

فیصلے سے معیشت اور عوام کو فائدہ ہوگا،تاجروں کا ردعمل

حکومت سندھ نے 3 جولائی کو اپنا سابقہ حکم نامہ عارضی طور معطل کر دیا ہے،اس ضمن میں باقاعدہ نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے۔تاجروں نے حکومت کے فیصلے کو خوش آئند قرار دیا ہے، تاجر برادری کے مطابق اس فیصلے سے نہ صرف ان کو کاروباری حوالے سے فائدہ ہوگا بلکہ عوام کو بھی عید کی خریداری میں بڑی سہولت ہوگی۔

سندھ میں مارکیٹیں پہلے 9 بجے تک بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا

واضح رہے صوبائی حکومت نے قومی اقتصادی کونسل کی سفارشات کی روشنی میں 17 جون کو صوبے میں رات 9 بجے بازار اور مارکیٹیں بند کرنے کا فیصلہ کیا تھا، فیصلے کا مقصد توانائی کے بحران پر قابو پانا ہے۔
مارکیٹیں سویرے کھولنے اور جلدی بند کرنے کی اچھی تجویز

2 Trackbacks / Pingbacks

  1. میٹروول سے سی ویو تک بھی پیپلز بس چلے گی - EduTarbiyah.com
  2. مارکیٹیں سویرے کھولنے اور جلدی بند کرنے کی اچھی تجویز - EduTarbiyah.com

Leave a Reply