گھی اور تیل کے کنستروں کی قیمتوں میں کمی آنے لگی

گھی اور تیل کے کنستروں کی قیمتوں میں کمی آنے لگی
گھی اور تیل کے کنستروں کی قیمتوں میں کمی آنے لگی

گھی اور تیل کے کنستروں کی قیمتوں میں کمی آنے لگی

کراچی (نیوز ڈیسک) ملک میں گھی اور تیل کے کنستروں کی قیمتوں میں کمی آنے لگی۔ مہنگائی کے ستائے عوام میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔پہلے مرحلے میں گھی اور تیل کے کنستر کے نرخوں میں ک دیکھنے میں آ رہی ہے۔

مختلف کمپنیوں نے فی کلو 70 سے 80 روپے کم کر دئے ہیں

تفصیلات کے مطابق انڈونیشیا اور ملائیشیا سے پام آئل کی آمد کے بعد گھی اور خوردنی تیل کے نرخوں میں کمی آنے لگی۔ مختلف کمپنیوں نے اپنےبرانڈ کے کنستر پر فی کلو 70 سے 80 روپے تک کی کمی کر دی ہے۔جبکہ 600 کلو میں بکنے والا تیل 540 سے 500 روپے تک آگیا ہے۔

قیمتوں میں کمی سے عوام سکھ کا سانس لینے لگے

توقع کی جا رہی ہے کہ آنے والے دنوں میں برانڈڈ کمپنیوں کے تیل اور گھی کے نرخوں میں کمی واقع ہوگی۔ کمی کا تناسب فی کلو 70 سے 100 روپے تک ہو سکتا ہے۔ایسا ہونے کی صورت میں مہنگائی کے مارے عوام کسی حد تک سکھ کا سانس لے سکیں گے۔

قیمتیں نیچے آتے دیکھ کر کمپنیوں نے سپلائی روک دی

دوسری طرف ذخیرہ اندوزوں نے بھی اپنا ہاتھ دکھانا شروع کر دیا ہے، گھی اور تیل کی قیمتوں میں کمی کے بعد تیل کی کمپنیوں نے سپلائی بند کرنا شروع کر دی ہے، جس کی وجہ سے خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ ملک میں گھی اور خوردنی تیل کی مصنوعی قلت پیدا ہو جائے گی جس کے نتیجے میں قیمتیں مزید بڑھ سکتی ہیں۔

عوام کا ذخیرہ اندوزوں پر کڑی نظر رکھنے کا مطالبہ

عوام نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ تیل اور گھی بنانے والی کمپنیوں پر کڑی نظر رکھی جائے تاکہ مصنوعی قلت کے ذریعے عوام کو کسی نئی آزمائش میں نہ ڈالا جائے۔عوام کا کہنا ہے کہ وہ خوردنی تیل اور گھی کے نرخوں میں ہوش ربا اضافے کے باعث پہلے ہی پریشان ہیں،ذخیرہ اندوزوں کے ہاتھوں انہیں مزید پریشان نہ کیا جائے۔

ذخیرہ مافیا کے باعث نرخوں میں کمی آنے کا سلسلہ متاثر

 تیل اور گھی کی قیمتوں میں کمی کی خبر پر پاکستانی عوام نے کسی قدر سکھ کا سانس لیا تھا مگر افسوس ذخیرہ اندوزوں کو عوام کی یہ خوشی برداشت نہ ہوسکی۔ اگر سپلائی معطل نہ کی جاتی تو پورے ملک میں تیل اور گھی کے نرخوں میں کمی دیکھنے میں آتی۔

انڈونیشیا اور ملائیشیا سے پام آئل کی پہلی کھیپ پاکستان پہنچ چکی

  واضح رہے گزشتہ ماہ پاکستانی وزیر اعظم اور انڈونیشیا کے صدر کے درمیان رابطہ ہوا تھا،  جس کے بعد پاکستانی حکومت کے نمائندوں اور صنعت کاروں کا ایک وفد انڈونیشیا کے دورے پر گیا تھا، اس دورے کے نتیجے میں پاکستان کو پام آئل فراہم کرنے کا معاہدہ طے پایا تھا۔ معاہدے کے مطابق پام آئل کے 10 بحری جہاز پاکستان آنے ہیں
جس کی پہلی کھیپ پاکستان پہنچ چکی ہے۔
پاکستان میں عیدالاضحی 10 جولائی کو ہوگی

 

Be the first to comment

Leave a Reply