علی امین گنڈاپور کی دھمکیاں، گومل یونیورسٹی غیر معینہ مدت کے لئے بند

علی امین گنڈاپور گومل یونیورسٹی
علی امین گنڈاپور کی دھمکیاں، گومل یونیورسٹی غیر معینہ مدت کے لئے بند

علی امین گنڈاپور کی دھمکیاں، گومل یونیورسٹی غیر معینہ مدت کے لئے بند

کراچی (ویب ڈیسک)پی ٹی آئی کے رہنما علی امین گنڈاپور کی جانب سے دھمکیوں کے بعد گومل یونیورسٹی ڈیرہ اسماعیل خان غیر معینہ مدت کے لئے بند ، جاری نوٹیفکیشن میں امن و امان کی ابتر صورت حال بندش کی وجہ قرار ۔

وی سی گومل یونیورسٹی اور تحریک انصاف کے رہنما کے درمیان تنازع میں شدت

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علی امین گنڈا پور اور گومل یونیورسٹی ڈی آئی خان کے وائس چانسلر کے درمیان تنازع شدت اختیار کر گیا جس کے بعد یونیورسٹی کو غیر معینہ مدت کے لئے بند کر دیا گیا ہے ۔

زرعی یونیورسٹی اور گومل یونیورسٹی کے اثاثوں کی تقسیم جھگڑے کی وجہ قرار

تنازع کی وجہ گومل یونیورسٹی اور زرعی یونیورسٹی کے اثاثوں کی تقسیم کو قرار دیا جا رہا ہے ، خیبر پختونخوا کے قائم مقام گورنر مشتاق غنی نے وی سی سے تین دن کے اندر اثاثوں کی تقسیم سے متعلق رپورٹ طلب کر لی ۔

علی گنڈا پور کا وائس چانسلر افتخار احمد پر مستعفی ہونے کے لئے دباؤ

تحریک انصاف کے رہنما علی امین گنڈا پور ایک آڈیو پیغام میں کہتے پائے جاتے ہیں کہ انہوں نے گومل یونیورسٹی کے وی سی سے استعفیٰ کا پوچھا پھر اسے اپنی زبان میں سجھایا ہے ، وہ مزید کہتے ہیں کہ وی سی جس کو خط لکھنا چاہتے ہیں اور جس سے شکایت کرنا چاہتے ہیں کرلیں وہ کسی سے نہیں ڈرتے ۔ علی امین گنڈاپور وائس چانسلر پر مستعفی ہونے کے لئے مسلسل دباؤ ڈال رہے ہیں ۔

گورنر خیبر پختونخوا نے اثاثوں کی تقسیم سے متعلق رپورٹ طلب کرلی

دوسری جانب وی سی گومل یونیورسٹی افتخار احمد نے خیبر پختونخوا کے قائم مقام گورنر مشتاق غنی کو شکایتی خط لکھا ہے اور کہا ہے کہ علی امین گنڈاپور کی دھمکیوں کی وجہ سے یونیورسٹی میں امن و امان کے خطرناک لاحق ہیں ، گورنر نے جوابی مراسلے میں وی سی سے زرعی یونیورسٹی اور گومل یونیورسٹی کے اثاثوں کی تقسیم کے حوالے سے تین دن کے اندر رپورٹ طلب کرلی ہے اور تنازع کی وجہ اثاثوں کی تقسیم کو قرار دیا ہے ۔

سرکاری کالجوں میں ای ٹرانسفر سسٹم متعارف

Be the first to comment

Leave a Reply