ملعون سلمان رشدی کی حالت تشویش ناک

ملعون سلمان رشدی کی حالت تشویش ناک
کراچی (ویب ڈیسک) گستاخ ناول نگار احمد سلمان رشدی پر نیویارک میں قاتلانہ حملہ ، ملعون کی حالت تشویش ناک ، وینٹی لیٹر پر علاج جاری ۔

کراچی (ویب ڈیسک) گستاخ ناول نگار احمد سلمان رشدی پر نیویارک میں قاتلانہ حملہ ، ملعون کی حالت تشویش ناک ، وینٹی لیٹر پر علاج جاری ۔

وینٹی لیٹر پر علاج جاری ، ایک آنکھ ضائع

سلمان رشدی پر امریکا کے شہر نیویارک میں ایک تقریب کے دوران حملہ کیا گیا ، گستاخ مصنف کے ایجنٹ کے مطابق وہ وینٹی لیٹر پر ہے اور بولنے سے قاصر ہے۔ ایک آنکھ بھی ضائع ہو جانے کا امکان ہے کیونکہ اس کے بازو کے اعصاب کٹ چکے ہیں۔

گردن اور پیٹ پر ایک سے زائد مرتبہ چھرا گھونپا گیا ، پولیس

اطلاعات کے مطابق سلمان رشدی کی گردن اور پیٹ پر چھری سے وار کیا گیا ہے پیٹ پر وار کی وجہ سے اس کا جگر بھی متاثر ہوا ہے ، حملے کے فوری بعد سلمان رشدی کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے اسپتال پہنچایا گیا جہاں وہ تشویش ناک حالت میں زیر علاج ہے ۔

چوبیس سالہ حملہ آور گرفتار ،تفتیش جاری

پولیس نے چوبیس سالہ حملہ آور کو گرفتار کر لیا ہے ، جس سے تفتیش کا عمل جاری ہے ۔نیویارک پولیس کے مطابق سلمان رشدی کی گردن اور پیٹ پر ایک سے زائد مرتبہ چھرا گھونپا گیا ہے ۔

پچھتر سالہ گستاخ مصنف ہندوستانی نژاد برطانوی شہری ہے

واضح رہے سلمان رشدی ہندوستانی نژاد برطانیہ شہری ہے اس وقت امریکا میں مقیم ہے ، ملعون سلمان رشدی نے 1988 کو “دی سیٹانک ورسز” کے نام سے ناول لکھا تھا جس میں اسلام اور پیغمبر اسلام کی توہین کی گئی تھی ، اس کتاب کی اشاعت کے بعد سے پورے عالم اسلام میں سلمان رشدی کے خلاف شدید غصہ پایا جاتا ہے ، اس وقت وہ مسلمانوں میں نفرت کا استعارہ ہے ، اسلامی ممالک میں ان کی اس کتاب پر پابندی ہے، ایران کی جانب سے سلمان رشدی کے سر کی قیمت 30 لاکھ ڈالر مقرر ہے ۔ سلمان رشدی 75 سال قبل ہندوستان کے ایک مسلمان گھرانے میں پیدا ہوا تھا ، بعد میں برطانیہ منتقل ہونے کے بعد مرتد ہوگیا تھا ۔

نبوت کے جھوٹے دعوے دار

Be the first to comment

Leave a Reply