فیٹف نے پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے کا عندیہ دے دیا

FATF decision about Pakistan
FATF decision about Pakistan

کراچی (کامرس ڈیسک)فیٹف نے پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے کا عندیہ دے دیا،رواں سال اکتوبر میں وائٹ لسٹ میں نام ڈالنے کا امکان،پاکستان میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔

 فیٹف کی ٹیم کا پاکستان کا دورہ کرے گی،اکتوبر میں وائٹ لسٹ میں شمولیت کا امکان

فیٹف کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پاکستان نے 34 آئٹمز پر مبنی اپنے دو ایکشن پلان مکمل کر لیے ہیں، ایف اے ٹی ایف کی ٹیم اکتوبر میں پاکستان کا دورہ کرے گی اور پاکستان کی جانب سے مطلوبہ شرائط پر عمل درآمد کی تصدیق کرے گی۔

برلن میں منعقدہ فیٹف اجلاس میں پاکستانی وفد کی شرکت

منگل کو برلن میں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کا تین روزہ اجلاس شروع ہوا جو جمعرات کو اختتام پذیر ہوا۔اجلاس میں وزیر مملکت برائے خارجہ امور حنا کھر ربانی کی قیادت میں پاکستانی وفد نے شرکت کی۔اجلاس میں فیٹف کی طرف سے پاکستان کو دئے گئے اہداف اور ان پر عمل درآمد کا جائزہ لیا گیا۔

پاکستانی وقت کے مطابق جمعے کی شام فیٹف کے صدر نے اجلاس میں ہونے والی پیش رفت کے حوالے سے میڈیا سے گفت گو کی۔انہوں نے کہا کہ ہماری ٹیم جلد پاکستان کا دورہ کرے گی۔ دورے کے دوران پاکستان کو اس بات کو یقینی طور پر ثابت کرنا ہوگا کہ اس نے منی لانڈرنگ اور دہشت گرد گروپس کی فنڈنگ روکنے کے لئے مؤثر اقدامات کیے ہیں۔

پاکستان نے منی لانڈرنگ، دہشت گردی کی مالی معاونت روکنے کے لئےاقدامات کئے،فیٹف کا اعتراف

فیٹف کے پریس اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پاکستان نے منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کی روک تھام کے لئے اصلاحات مکمل کی ہیں۔اقوام متحدہ کی فہرست میں شامل دہشت گرد گروپوں اور رہنماؤں کی پراسیکیوشن پرپاکستان نے کافی حد تک پیش رفت کی ہے، منی لانڈرنگ کی تحقیقات اور پراسیکیوشن کے حوالے سے بھی پاکستان نے مثبت اقدامات کئے ہیں۔

کامیابی پر پوری قوم کو مبارک باد پیش کرتی ہوں،حنا کھر ربانی

فائنانشیل ایکشن ٹاسک فورس کے حالیہ اجلاس میں پاکستان کے حوالے سے مثبت فیصلوں پر ملک بھر میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔وزیر مملکت برائے خارجہ امور حنا ربانی کھر نے پوری قوم کو مبارکباد پیش کی ہے جو فیٹف اجلاس میں شرکت کی غرض سے میں موجود ہیں ان کا کہنا تھا کہ فیٹف نے پاکستان کے دونوں ایکشن پلان کو مکمل قرار دے دیا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان اس رفتار کو جاری رکھنے اور معیشت کو فروغ دینے کے لئے پر عزم ہے۔

حنا کھر ربانی کا کہنا ہے کہ پاکستان کے گرے لسٹ سے نکلنے کا عمل شروع ہوگیا ہے، امید کی جاتی ہے کہ رواں سال اکتوبر تک گرے لسٹ سے نکلنے کا عمل مکمل ہوجائے گا۔انہوں نے کہا کہ اب فیٹف کے طریقہ کار کے تحت ایک تکنیکی جائزہ ٹیم پاکستان آئےگی، ہم نے فیٹف کو یقین دہانی کرائی ہے کہ ان کے ساتھ ہر ممکن تعاون فراہم کیا جائے گا۔

پاکستان کو 2018 میں گرے لسٹ میں شامل کیا گیا تھا

واضح رہے پاکستان کو 2018 میں دہشت گردی کی مالی معاونت اور منی لانڈرنگ کی نگرانی کرنے والی عالمی تنظیم FATF (فائنانشل ایکشن ٹاسک فورس) گرے لسٹ میں ڈالا تھا۔گرے لسٹ میں شامل ممالک کو بہت سی معاشی پابندیوں اور عالمی سرمایہ کاری کے حوالے سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے،گرے لسٹ سے نکلنے کے پاکستان میں عالمی سرمایہ کاری کے راستے کھلیں گے جس کے نتیجے میں ملکی معیشت کو سنبھلنے کا موقع ملے گا۔

گرے لسٹ سے نکلنے کے بعد پاکستان میں عالمی سرمایہ کاری کی راہ ہموار ہوگی، معاشی ماہرین

معاشی ماہرین کے مطابق فیٹف کی گرے لسٹ میں ہونے کی وجہ سے عالمی سطح پر پاکستان کی ساکھ خراب ہوگئی تھی۔خصوصا مغربی ممالک فیٹف کو معاشی حوالے سے بہت اہمیت دیتے ہیں اور فیٹف کی گرے لسٹ میں شامل ممالک کی مارکیٹ پر اعتماد نہیں کرتے اور ایسے ممالک میں سرمایہ کاری کرنے سے ہچکچاتے ہیں۔ اب جب پاکستان کا نام گرے لسٹ سے نکلنے کے امکانات پیدا ہو گئے ہیں تو یہ ملکی معیشت کے لئے ایک نیک شگون ہے۔اس سے مغربی ممالک کا پاکستانی مارکیٹ پر اعتماد بحال ہوگا اور یہاں سرمایہ کاری کے مواقع پیدا ہوں گے۔

1 Comment

Leave a Reply