این اے 245 ضمنی الیکشن ،89 فیصد عوام نے ووٹ کاسٹ نہیں کیا

این اے 245 کراچی عوام کا سیاسدانوں پر عدم اعتماد
این اے 245 کراچی عوام کا سیاسدانوں پر عدم اعتماد

این اے 245 ضمنی الیکشن ،89فیصدعوام نے ووٹ کاسٹ نہیں کیا

(ویب ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف نے این اے 245 کراچی کا انتخابی معرکہ اپنے نام کیا ، پی ٹی آئی کے امیدوار محمود مولوی 29 ہزار سے زائد ووٹ لے کر کامیاب ، متحدہ قومی موومنٹ کا دوسرا نمبر ۔ صرف گیارہ فیصد عوام نے ووٹ کاسٹ کیا ۔89 فیصد عوام نے تمام سیاسی جماعتوں کو مسترد کر دیا ۔

محمود مولوی نے 29 ہزار سے زائد ووٹ لئے ، ایم کیو ایم کا دوسرا نمبر

تفصیلات کے مطابق حلقہ این اے 245 کے تمام پولنگ اسٹیشنز کے غیرسرکاری نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے محمود مولوی نے 29 ہزار 266 ووٹ لے کر کامیابی اپنے نام کی جبکہ متحدہ قومی موومنٹ کے معید انور13 ہزار 119 ووٹ لیکردوسرے نمبر پر آئے ۔

تحریک لبیک 9 ہزار سے زائد ووٹوں کے ساتھ تیسرے نمبر پر رہی

تحریک لبیک پاکستان کے احمد رضا 9 ہزار 339 ووٹ لیکر تیسرے نمبر پر رہے ، آزاد امیدوارڈاکٹرفاروق ستار 3 ہزار 479 حاصل کر سکےجبکہ مہاجرقومی موومنٹ کے محمد شاہد نے ایک ہزار 177 ووٹ لئے۔

حلقے کے 89 عوام کا سیاسی جماعتوں پر عدم اعتماد کا اظہار

ضمنی الیکشن میں حلقے کے عوام کی دل چسپی نہ ہونے کے برابر رہی، ٹرن آؤٹ صرف گیارہ فیصد رہا۔ متعدد پولنگ اسٹیشنز پر سناٹے کی سی کیفیت نظر آئی ، 89 فیصد عوام کی عدم دل چسپی ظاہر کرتی ہے کہ ان کا کسی بھی سیاسی جماعت پر اعتماد نہیں رہا جو پاکستان کے سیاسی نظام کے لئے اچھا شگون نہیں ہے ۔

این اے 245 ضمنی الیکشن میں 15 امیدوار میدان میں اترے تھے

حلقہ این اے 245 سے 15 امیدوار میدان میں تھے ، جن میں پی ٹی آئی ،ایم کیو ایم ، ٹی ایل پی، پاک سر زمین ، مہاجر قومی موومنٹ کے امیدواروں کے علاوہ آزاد امیدوار ڈاکٹر فاروق ستار شامل تھے ، پیپلز پارٹی اور جے یو آئی نے اس حلقے سے اپنے امیدوار کو ایم کیو ایم کے امیدوار کے حق میں دست بردار کرایا تھا ۔

واضح رہے حلقہ این اے 245 کی نشست ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کی وفات کی وجہ سے خالی ہوئی تھی جو 2018 کے عام انتخابات میں تحریک انصاف کے ٹکٹ پر کامیاب ہوئے تھے ۔

این اے 245 کراچی میں ضمنی انتخاب ، ووٹنگ جاری ، ووٹرز کی تعداد کم

Be the first to comment

Leave a Reply