اوگرا کی سفارش کے برعکس تیل کی قیمتوں میں اضافہ ،عوام مایوس

اوگرا کی سفارش کے برعکس تیل کی قیمتوں میں اضافہ

کراچی (ایجو تربیہ ڈیسک) پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے فیصلے پر عوام شدید مایوس، حکومت کو کوسنے لگے، حکومت نے اوگرا کی سفارش کے برعکس قمیتوں میں اضافہ کر دیا، اوگرا نے قیمتوں میں کمی سفارش کی تھی ۔

عالمی منڈی میں قیمتوں میں کمی کا فائدہ ہمیں نہیں دیا گیا ، عوام کا سخت ردعمل

حکومت کے فیصلے پر عوام کی جانب سے سخت ردعمل دیکھنے میں آرہا ہے ، عوام کا کہنا ہے کہ عالمی منڈی میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مسلسل کمی آ رہی ہے لیکن ہماری حکومت نے اس کا فائدہ عوام کو نہیں دیا ، عوام نے حکومت کو یاد دہانی کراتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعظم نے اعلان کیا تھا کہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں ہونے والی کمی کا فائدہ عوام کو کسی کمی بیشی کے بغیر دیا جائے گا لیکن افسوس کل کا حکومتی فیصلہ اس اعلان کی نفی کر رہا ہے ۔

امریکی اور برطانوی خام تیل کی قیمتوں میں مزید 7 ڈالر کی کمی

واضح رہے عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا سلسلہ جاری ہے ، بدھ کو عالمی منڈی میں برطانوی خام تیل برینٹ کروڈ آئل کی قیمت میں 7 ڈالر کی کمی آئی تھی جس کے بعد برطانوی خام تیل کی فی بیرل قیمت 97.86 ہوگئی تھی جبکہ امریکی خام تیل ٹیکساس انٹر میڈیٹ کی قمیت میں 6 اعشاریہ 17 ڈالر کی کمی ریکارڈ ہوئی تھی جس کے بعد امریکی خام تیل فی بیرل 91 ڈالر کا ہوگیا تھا ۔

اوگرا نے پٹرول فی لیٹر 16 روپے, ڈیزل 89 پیسے سستا کرنے کی سفارش کی تھی

عالمی مارکیٹ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں آنے والی کمی کو دیکھتے ہوئے آئیل ریگولیٹری اتھارٹی نے حکومت سے تیل کی قیمتوں میں کمی کی سفارش کی تھی ، میڈیا ذرائع کے مطابق پٹرول کی قیمت میں فی لیٹر 16 روپے کمی کی سفارش کی گئی تھی جبکہ ڈیزل کی قیمت میں 89 پیسے کمی کی سفارش کی گئی تھی ۔ حکومت پاکستان کی جانب سے یکم ستمبر کو اوگرا کی سفارش کے مطابق قیمتوں میں کمی کے اعلان کی توقع تھی ۔

حکومت نے اوگرا کی سفارش ہوا میں اڑا دی ، قیمتیں کم کرنے کے بجائے بڑھا دیں

حکومت نے اوگرا کی سفارش ہوا میں اڑا دی ، قمیتیں کم کرنے کے بجائے مزید بڑھا دیں ۔اوگرا کی سفارش کے برعکس حکومت نے بدھ کی رات پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا فیصلہ سنا دیا ،وزارت پٹرولیم کی جانب سے نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے جس کے مطابق پٹرول 2 روپے 7 پیسے اضافے کے ساتھ 235 روپے 98 پیسے کا لیٹر ہوگیا ، ڈیزل 2 روپے 99 پیسے اضافے کے ساتھ 247 روپے 43 پیسے کا ہوگیا ، مٹی کا تیل 10 روپے 92 پیسے اضافے کے ساتھ 210 روپے 32 پیسے کا ہوگیا جبکہ لائٹ ڈیزل 9روپے 79 پیسے اضافے کے ساتھ 201 روپے 54 پیسے کا ہوگیا ۔

لیوی کم سے کم رکھ کر عوام کو ریلیف دینے کی کوشش کی ہے ،حکومت کا موقف

دریں اثنا حکومت کا کہنا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا تعین کرتے ہوئے عوام کو ریلیف دینے کی کوشش کی گئی ہے حکومت کے مطابق مصنوعات پر لیوی کم سے کم رکھا گیا ہے تاکہ عوام پر بوجھ کم پڑے ۔

Be the first to comment

Leave a Reply