وزیر اعظم نے کاغذ کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافے کا نوٹس لے لیا

Shahbaz Sharif

وزیر اعظم نے کاغذ کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافے کا نوٹس لے لیا

کراچی (تعلیمی ڈیسک)وزیر اعظم نے کاغذ کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافےاور درسی کتب کی عدم دستیابی کا نوٹس لے لیا۔متعلقہ حکام کو قیمتیں کنٹرول کرنے اور نصابی کتابوں کی اشاعت کے حوالے سے شکایات کے ازالے کی ہدایات جاری کردی گئیں۔

ایک ماہ کے اندر کاغذ کی قیمتوں میں دو سو گنا اضافہ ریکارڈ

تفصیلات کے مطابق پیپر مارکیٹس سے کاغذ غائب ہونے کے باعث گزشتہ ایک ماہ کے اندر کاغذ کی قیمتوں میں ہوش ربا اضافہ ہوگیا ہے 100 روپے کلو کا کاغذ اب 300 روپے میں فروخت ہو رہا ہے ۔ کاغذ کی قیمتیں بڑھنے کے ساتھ ہی اسٹیشنری کے نرخوں میں بھی یوش رہا اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔

پیپر مارکیٹ سے کاغذ غائب ہونے کے باعث درسی کتب کی چھپائی تاخیر کا شکار

مارکیٹ میں کاغذ کی قلت اور قیمتوں میں ہوش ربا اضافے کے باعث اسکولوں اور دیگر تعلیمی اداروں کے نصاب کی چھپائی کا کام بھی تاخیر کا شکار ہے۔ طلباء وطالبات سخت اضطراب سے دوچار ہو چکے ہیں اور والدین بھی اپنے بچوں کے مستقبل کے حوالے سے تحفظات اور خدشات کا شکار ہیں۔

 تعلیمی سال سر پر، نصابی کتب دستیاب نہیں، طلباء اور والدین سخت پریشان

نیا تعلیمی سال شروع ہونے کے باوجود درسی کتب کی عدم دستیابی کے باعث طلباء اور ان کے والدین شدید پریشانی کا شکار ہو چکے ہیں ذرائع کے مطابق کاغذ کا بحران پیپر انڈسٹری سے وابستہ مضبوط مافیا کا پیدا کردہ ہے منافع خوری کے لالچ میں انڈسٹری میں کاغذ کی مصنوعی قلت پیدا کر دی گئی ہے۔

کاغذ کی صنعت سے وابستہ چھوٹے تاجروں کا کاروبار ٹھپ ہوچکا

پیپر انڈسٹری سے وابستہ چھوٹے تاجر بھی اس صورت حال سے سخت پریشان ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ ہمارا کاروبار ٹھپ ہوگیا ہے۔انہوں نے حکام بالا سے معاملے کا نوٹس لینے کی اپیل کی ہے۔

میاں شہباز شریف کی کاغذ کی قیمتیں کنٹرول کرنے، درسی کتب کی بروقت چھپائی یقینی بنانے کی ہدایت

دریں اثنا وزیر اعظم پاکستان میاں محمد شہباز شریف نے معاملے کا نوٹس لے لیا ہے اور متعلقہ حکام اور اداروں کو مارکیٹ میں کاغذ کی دستیابی یقینی بنانے ، کاغذ کی قیمتوں کو کنٹرول کرنے اور بروقت نصابی کتب کی اشاعت یقینی بنانے کے احکامات جاری کیے ہیں۔

Be the first to comment

Leave a Reply