جانوروں کی قیمتوں میں 100 فیصد اضافہ،قربانی کرنا خواب بن گیا

Qurbani 2022
قربانی 2022،قیمتوں میں 100 فیصد اضافہ

کراچی (نیوز ڈیسک) عید الاضحی کے موقع مسلمانوں کے لئے قربانی کرنا خواب بن گیا،جانوروں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں،پچھلے سال کے مقابلے میں قیمتیں دو گنی ہوگئیں۔

جانور خریدنے کے لئے مویشی منڈی آنے والے مایوس لوٹ رہے ہیں

تفصیلات کے مطابق گزشتہ سال کے مقابلے میں اس سال قربانی کے جانوروں کی قیمتوں میں تقریباً دو گنا اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔کراچی کے علاقے سہراب گوٹھ میں ایشیا کی سب سے بڑی مویشی منڈی لگ چکی ہے، جہاں جانور خریدنے کے لئے آنے والوں کا کافی رش نظر آتا ہے لیکن جانوروں کے نرخ سن کر لوگوں کے کان کھڑے ہو جاتے ہیں۔

گزشتہ سال 80 ہزار میں بکنے والے جانور 2 لاکھ میں فروخت ہو رہے ہیں

عینی شاہدین کے مطابق نارمل قسم کے جانور بھی متوسط طبقے کی گنجائش سے باہر ہو چکے ہیں، پچھلے سال جو جانور 80 سے 90 ہزار میں میں فرخت ہوتے تھے وہ اب ڈیڑھ سے دو لاکھ میں فروخت ہو رہے ہیں۔اور جو جانور گزشتہ سال دو سے ڈھائی لاکھ روپے تک فروخت ہوتے تھے وہ چار سے پانچ لاکھ میں فروخت ہو رہے ہیں۔جن جانوروں کی قیمت پچھلے سال پانچ لاکھ یا اس سے اوپر تھی اب وہ دس لاکھ سے اوپر میں فروخت کئے جا رہے ہیں۔

اعلی قسم کے جانوروں کی قیمت 20 لاکھ سے 40 لاکھ کے درمیان

اعلی قسم کے جانوروں کا ریٹ گزشتہ سال دس لاکھ سے شروع ہوتا تھا جبکہ اس سال بیس لاکھ لاکھ سے شروع ہوتا ہے۔سہراب گوٹھ مویشی منڈی میں فی الوقت 30 لاکھ سے 40 لاکھ تک کے جانور موجود ہیں جو 25 من سے لے کر 40 من تک گوشت والے ہیں۔ ایک جانور کے مالک کے بہ قول اس کا 40 من کا بیل روزانہ پانچ کلو دودھ، ایک پاؤ گھی سمیت مختلف قسم کے خاص قسم کے دانے کھاتا ہے۔ڈھائی سال میں اس کی خوراک پر جتنا خرچہ آیا ہے وہ اس کی قیمت سے کہیں زیادہ ہے۔

مڈل کلاس کے لئے رواں سال سنت ابراہیمی کی ادائیگی نہایت مشکل

کراچی کی مویشی منڈی کا رخ کرنے والے اکثر خریدار جانور خریدنے کی تمنا دل میں لئے واپس لوٹ رہے ہیں کیونکہ ان کی اکثریت کا تعلق مڈل کلاس سے ہے جو گزشتہ چار سالوں کے دوران ہونے والی ہوش ربا مہنگائی سے سب سے زیادہ متاثر ہوئی ہے۔ پچاس ، ساٹھ ہزار ماہانہ کمانے والے تو مشکل میں ہیں ہی، ایک لاکھ تک ماہانہ کمانے والوں کے لئے بھی اس سال سنت ابراہیمی کی ادائیگی مشکل نظر آتی ہے۔

امیر لوگ زیادہ قیمتی جانوروں کے بجائے متوسط جانور قربان کریں، علماء کا مشورہ

دریں اثنا علماء کرام نے امیر لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ پچاس ،ساٹھ لاکھ اور کروڑوں کے جانور خریدنے کے بجائے اسی رقم سے متوسط درجے کے بہت سارے جانور خرید لیں،تاکہ قربانی کے موقع پر نمود و نمائش کا پروان چڑھتا کلچر دم توڑ جائے اور قربانی کا گوشت زیادہ سے زیادہ مستحقین تک پہنچ جائے۔

Be the first to comment

Leave a Reply