سندھ میں 30لاکھ مکانات تباہ ،ڈیڑ کروڑ بے گھر

سندھ میں 30 لاکھ مکانات تباہ
سندھ میں 30 لاکھ مکانات تباہ

سندھ میں 30لاکھ مکانات تباہ ،ڈیڑھ کروڑ بے گھر

کراچی (ویب ڈیسک) سندھ میں 30لاکھ مکانات تباہ ہوئے ،ڈیڑھ کروڑ سے زائد لوگ بے گھر ہوئے ،470 اموات واقع ہوئیں ،آٹھ ہزار سے زائد زخمی ہوئے ،یہ بات وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے جمعے کے روز پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی ۔

ایک لاکھ 10 ہزار ٹینٹ،20ہزار ترپالیں تقسیم کیں،وزیر اعلی

وزیراعلی سندھ کا کہنا تھا کہ این ڈی ایم اے نے سندھ کو صرف آٹھ ہزار ٹینٹ دئیے ہم نے ابھی تک ایک لاکھ دس ہزار ٹینٹ تقسیم کئے مزید تین لاکھ ٹینٹس کا آرڈر دے چکے ہیں ،اسٹاک میں موجود بیس ہزار ترپالیں بھی تقسیم کر چکے ہیں ۔

بارہ دنوں میں 27 اضلاع کا دورہ کیا ،سید مراد علی شاہ

پریس کانفرنس میں ان کا مزید کہنا تھا کہ 2010ء کے بعد یہ سب سے بڑا سیلاب ہے، گزشتہ 12 سے 13 روز میں 27 اضلاع کا دورہ کیا، ابھی جیک آباد، گھوٹکی اور کشمور میں نہیں گیا۔

پانی نکالنے یا کٹ لگانے کا فیصلہ محکمہ آبپاشی کرے گا ،پریس کانفرنس

سید مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ کہیں کوئی کٹ لگانا ہو یا پانی نکالنا ہوگا اس کا فیصلہ صوبائی محکمہ آبپاشی کرےگا، انہوں نے سب سے صبر سے کام لینے کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ پانی قدرتی گزر گاہوں سے سمندر تک جائے گا ۔

سیلاب متاثرین ، مذہبی تنظیمیں اور دینی شخصیات

Be the first to comment

Leave a Reply